بظاہر صحت مند نظر آنے والا انسان

'بظاہر صحت مند نظر آنے والا انسان, اندر سے بھی اتنا ہی صحت مند ہے’ ' بظاہر تو جسم کو مضبوط بنا لیا, پر اندر سے کیسے مضبوط بنائیں’

ضروری نہیں صحت مند نظر آنے والا انسان طبعی طور پر اندر سے صحت مند ہو. یورپ میں مختلف انسانوں پہ ایک بہت بڑی تحقیق کی گئی تو ان میں بلڈ پریشر ذیابطیس یا دل کی بیماریوں کی علامت نہیں تھی، لیکن بعد میں جا کر مختلف بیماریاں لاحق ہو گئی.اس سے پتہ چلا وہ جو ایک صحت مند انسان کوآںن فاںن ایسی بیماریاں ہوجاتی ہیں جس کا اس نے کبھی سوچا بھی نہیں ہوتا، آج کل ہم نے اپنے معاشرے میں دیکھتےھیں ایک اچھا خاصہ چلتا پھرتا انسان پہلے بیمار پژھتا ہے پھر اس کی بیماری اتنی شدید ہوجاتی ہیں کہ وہ قابو سے باہر ھوجاتی ہیں اور پھر ایک تکلیف دے دنوں کے بعد ہم کو ایک ہولناک خبر ملتی ہے۔ یہ کیسے ہوتا ہے،،، اور اس سے کیسے بچا جا سکتا ہے۔۔۔۔ زندگی کے خاتمے کا سامنا ہر انسان کو کرنا ہے لیکن میں چاہتا ہوں کہ ہم زندگی کو بھر پور طریقے سے جئے، یہ ہمارے بس میں ہے کہ ہم اپنے لائف سائیکل کو بڑا سکتے ہیں، اور اپنی زندگی سے لطف اٹھا سکتے ہیں۔ جو اللہ تعالی نے ہم کو اس خوبصورت زندگی میں دیا ہے، لیکن ہم نے اس زندگی کے ساتھ کیا کیا ہے,,, اور کیا کر رہے ہیں۔ تو سوال یہ ہےکہ یہ ہوتا کیوں ہے۔۔۔۔۔۔ اس بات کومیں ایک مثال سےسمجھاوں گا۔ ایک عمارت میں مختلف جگہوں پر ٹائم بم لگا دیا جائے ،اور ہر بم کا ٹائم سیٹ کردیں، جب پہلا بم چلے گا تو دوسرے بم اپنےوقت پہلے ہی اپنا کام کر جائیں گے ۔ بالکل اسی طرح سے ہمارے جسم میں بھی ہم ایسی ہی ناسمجھی ، بیوقوفی اور لاپروائی کی وجہ سے نقصان اٹھاتے ہیں۔ انہیں سب سے پڑنے والے اثرات سے ہمارے جسم کے خلیات میں ٹائم بم ایکٹیویٹ ہوجاتا ہے۔ جس چیزکویا تو ہونا ہی نہیں تھا، یا بعد میں ہونا تھا، ہوچکا ہوتا ہے۔ اور جب پہلا دھماکہ ہوتا ہے، تو بہت دیر ہوچکی ہوتی ہے اس کے ساتھ اور بہت سارے دوسرے بم بھی وقت سے پہلے پھٹ پڑتے ہیں اور کچھ کا ٹائم اور کم ہوجاتا ہے اور پھر حالات کسی کے قابو میں نہیں ہوتے ۔اور ہمیں قدرت سے لڑنے کی سزا ملتی ہے۔ توں آیا اسے کیسے روکا جا سکتا ہے ؟؟؟۔۔ پہلے تو یہ سمجھتے ہیں کہ یہ ہمارے جسم میں ہوتا کیوں ہے۔۔۔۔۔۔۔۔ سائنسدان اور ڈاکٹر ہمارے جسم پر تحقیق کر رہے ہیں اور کرتے رہیں گے۔ ہمارا جسم دو اور دو چار کی طرح کام نہیں کرتا۔ ہمارے جسم میں دو اور دو تین یا دو اور دو پانچ بھی ہو سکتا ہے۔ ہمارے جسم کے باہر سے نظر آنے والے عضو ہمارے کنٹرول میں ہوتے ہیں۔ جیسا کہ ہمارے ہاتھ اور ٹانگ ۔۔۔۔۔۔ لیکن جسم کے اندر کے اعضاء ہمارے کنٹرول میں نہیں ہماراجسم اندر سے ایک خودکار نظام پر کام کرتا ہے۔ ہر اعضا ایک خاص نظم و ضبط کے تحت کام کر رہا ہے۔ جو براہ راست ہمارے کنٹرول میں نہیں لیکن بالواسطہ اس کی دیکھ بھال ہماری ذمہ داری ہے، کیونکہ اس ہی سے ہماری بقا ہے۔ قدرت نے ہماری فطرت کو معتدل بنایا ہے۔ بنیادی طور پر انسان فطرت پسند ہے، لیکن اس کی فطرت میں تجسس اور تسکین لینا بھی ہے۔ وہ اپنی چند لمحوں کی ذہنی خوشی کے لئے انسان کے نقصاندہ بنائی ہوئی چیزوں کا استعمال کرتا ہے یہ چیزیں وقتی تسکین اور کچھ چیزیں وقتی فائدہ تو دیتی ہیں لیکن بدلے میں بہت مہنگی قیمت وصول کرتی ہیں۔ ان نقصان دہ چیزوں میں قانونی طور پر جائز چیز۔۔۔۔۔۔ مثال کے طور پر سرفہرست ۔۔۔۔سگریٹ، تمباکو کا استعمال، شراب نوشی وغیرہ ہیں ۔ اور غیر قانونی منشیات کا استعمال ہے، یہ وہ چیزیں ہیں جن کا استعمال ہماری خوراک میں نہیں ہے۔[ وائن کے علاوہ] اب ہم بات کریں گےوہ استعمال ہونے والی چیزیں جوقانونی ہیں اور نقصان دہ ہیں، اس میں سرفہرست چیز چائے ہے۔۔۔۔ جی ہاں چائے۔ وہ کیسے؟؟؟ اس کے لیے ایک الگ تحریر درکار ہے۔ اس کے بعد سفید چینی اور ہائی فریکٹوزکارن سیرپ کا استعمال ہے ۔اور غیر معیاری تیل و چکنائی کا استعمال، غیرمعیاری اور کیمیکل سے بنے رنگوں کا استعمال ،غیر معیاری اور کیمیکل سے محفوظ کیے گئے کھانوں کا استعمال اور سب سے بڑھ کر لاپرواہ طرز زندگی۔۔۔۔۔ ماں کے پیٹ میں، ہماری تخلیق سے لے کر، ہماری آخری سانس تک، ہمارے جسم کو پروگرام کیا گیا ہے۔ جسے جینیاتی کوڈ بھی کہتے ہیں ،بلکہ یہ کوڈ ہم کو ہمارے آباؤ اجداد سے ملتا ہے۔ یہ ایک خودکار نظام ہوتا ہے۔ اگر ہم اپنی زندگی، فطرتی[ قدرتی] طور سے گزارے ، تو یہ ہمارے ساتھ دیتا ہے۔ لیکن اگر ہم نہ سمجھیں، بے وقوفی اور لاپروائی سے کام لیں، تو یہ ہمارا ساتھ نہیں دیتا۔ اور کسی بھی کمزور خلیہ کا ٹائم بم خاموشی سے ایکٹیویٹ ہو جاتا ہے۔ اور پھر بہت سارے خاموش ٹائم بم زندہ ہو جاتے ہیں اور پہلے دھماکے کے ساتھ نہ رکنے والا عمل شروع ہو جاتا ہے۔ اور نتیجہ ” بظاہر چلتا پھرتا انسان اپنی آخری سفر کی طرف چلا جاتا ہے" دعاؤں کا طلب گار ۔۔۔۔ شیف اسد

https://www.facebook.com/chefasad2__tn__=%2CdCH-R-R&amp=;eid=ARDQwmhSZmKexltCEl2WXe_9FZ20CQ3o1c9kAfDcKLWP_PX4XyX_8H7VGeoa6Jg9GuBRfFFzf03GNzwt&hc_ref=ARSqlpcMLuxXs8jDlILpn5g-7UaTm8HiMRf_G79WM1hOzyMUrSDhSgB-dzquUTyyBaQ&fref=nf&hc_location=group

اس موضوع کو جواب دیں

یہ سائٹ انفرادی کمپیوٹر، پرسنل سروس سیٹنگ، تجزیاتی و شماریاتی مقاصد، مواد اور اشتہارات کی کسٹمائزیشن میں فرق تلاش کرنے کے لئے کوکیز اور دوسری ٹریکنگ ٹیکنالوجیز کو استعمال کرتی ہے نجی معلومات کی حفاظتی اور کوکیز پالیسی