کرشماتی نظام تشخیص طب کیا ہے

ہمارا کرشماتی نظام تشخیص طب۔کیا ہے۔۔۔۔۔۔

بفضل ربی موجودہ دور میں پوری میڈیکل ساٸینس میں اک عظیم انقلاب ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ایک تعارف۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔نمبر1۔۔۔۔ہمارا ہاتھ کی لکیروں کا نظام تشخیص سو فی صد درست اور یقینی ہے ۔۔۔کوٸ قیاسی یا ظنی علم نہیں ۔۔۔۔نمبر 2۔۔۔۔۔ہمارے نظام تشخیص طب میں نبض دیکھنے کی قطعا ۔کو ٸ ضرورت ہی نہیں ۔۔۔نمبر3۔۔۔۔۔۔اس میں مریض کا قارورہ دیکھنے کی بھی کوٸ ضرورت ہی نہیں۔۔۔۔۔۔۔۔ہاتھ اک میٹر ہے جس پر جسم انسانی کے اندر کی تمام صورتحال لکیروں کی صورت میں درج ہوتی ہے ۔۔۔۔نمبر4۔۔۔۔اس نظام میں نہ ہاتھ کی رنگت نہ ابھری ہوٸ رگیں اور نہ ہی لکیروں کی رنگت یا گہراٸ دیکھی جاتی ہے ۔۔۔۔نمبر 5۔۔۔۔۔۔ہمارے نظام تشخیص میں جوں جوں مریض کا مزاج تبدیل ہوتا ہے ۔مریض کے ہاتھوں کی لکیریں بھی تبدیل ہوتی جاتی ہیں ۔۔۔۔نمبر 6۔۔۔۔ہمارے نظام تشخیص میں صرف ہاتھ کی لکیریں دیکھ کر ہی مریض کے زیر استعمال اغذیہ اور ادویہ کے مزاجوں کا بھی علم ہو جاتا ہے ۔۔۔نمبر 7 ۔۔۔۔۔ہمارے نظام تشخیص میں صرف ہاتھ کی لکیریں دیکھ کر ہی مریض کا سابقہ مزاج ۔۔۔موجودہ مزاج۔۔۔اور جس طرف آگے مزاج جا رہا ہو اس کابھی یقینی سو فی صد بفضلہ تعالی علم ہو جاتا ہے ۔۔۔۔نمبر 8 ۔۔۔۔بفضلہ تعالی یہ اک سو فی صد طبی علم ہے اور میری معلومات کے مطابق آج تک کسی بھی بڑے سے بڑے سایسنسدان اور طبیب۔۔۔ جالینوس۔۔۔ بو علی سینإ ۔۔۔صابر ملتانی رحمتہ اللہ علیہ۔سے لے کر موجودہ دور کے تمام بڑے بڑے طبیبوں نے بھی کہیں ایسے علم کا اشارہ تک نہیں کیا۔۔نمبر9...نہ علم نجوم ہے ۔۔نہ اس میں زاٸچہ بنتا ہے ۔۔نہ یہ سفلی علم ہے نہ یہ جنات کا کام ہے آپ سب لوگوں کے یہ تمام قیاس سو فیصد غلط ہیں۔۔۔۔۔۔نمبر 10 ۔۔۔اس کرشماتی نظام تشخیص کے تحت میں طب ۔۔ہومیو پیتھی ۔۔ویدک۔۔۔اور ایلو پیتھک۔۔۔پر اللہ کے فضل سے اپنی تحقیقات مکمل کر چکا ہوں۔۔۔۔اب کچھ دوسرے امور پر کام جاری ہے ۔۔انشإاللہ آنے والے دور میں مکمل میڈیکل ساٸینس۔اس نظام سے مستفید ہو گی ۔۔۔نمبر۔۔۔۔11...11 نومبر 2018 کو ملک بھر اور بیرونی ممالک تک سے اطبإ کرام اور شایقین طب جناب علی اصغر چانڈیا صاحب مظفر گڑھ کی دعوت پر میرے پاس مطب کما لی لاہور میں تشریف لا کر اس کرشماتی نظام تشخیص کا عملی مشاہدہ کر چکے ہیں ۔۔جس کی مکمل تفصیل ان میں سے کٸ طبیبوں نے فیس بک پر بھی شٸیر کی ہوٸ ہے ۔جو ریکارڈ ہے ۔۔نمبر 12....ہمارا کرشماتی نظام تشخیص طب۔صابر ملتانی رحمتہ اللہ علیہ کی طبی تحقیقات قانون مفرد اعضإ کی چھ تحریکوں کے عین مطابق ہے اور قانون مفرد اعضإ کی سو فی صد تصدیق کرتا ہے ۔۔۔۔

ان تمام باتوں کا جو میں نے اوپر بیان کی ہیں ۔۔بفضلہ تعالی کٸ سال سے سر عام لوگوں کو سوہدرہ ۔۔لاہور۔۔۔اور پشاور ۔۔۔میں مشاہدہ کرواتا ۔۔رہا ہوں ۔۔۔اور ۔۔یہ علم مجھ سے ملنے والے مریضوں اور طبیبوں کے لیے نیا نہیں رہا۔ اور اس کے متعلق میں نے اپنی طبی کتب۔۔۔۔۔ طب کا پہلا قاعدہ ۔۔۔اور ۔۔۔حجامہ سنت نبوی صلی اللہ علیہ وسلم۔جو کہ ادارہ ۔مطبوعات سلیمانی اردو بازار لاہور سے دستیاب ہیں میں نے تفصیل کے ساتھ طبی دنیا کو بتایا بھی ہے کہ یہ بھی اک علم بفضلہ تعالی دریافت ہو چکا ہے ۔۔۔۔۔اور اس علم کی کرشمے میں نے فیس بک پر بھی بے شمار دفعہ پوری دنیا کو دکھاٸے ہیں۔۔۔۔۔اورآپ میں سے بھی بھت لوگوں نے دیکھے ہوں گےالحمدللہ رب العالمین ۔۔۔۔اس پوسٹ کو پڑھ کر تمام بھاٸیوں کے نالج کے لیے آگے لازمی شٸیر کر دیں۔۔۔۔۔۔شکریہ

حکیم شہباز حسین اعوان کمالی سوہدروی۔سوہدروی۔فاضل طب والجراحت ۔۔۔۔مصنف طبی کتب کثیرہ ۔۔۔۔۔مطب کما لی سوہدرہ تحصیل وزیر آباد ۔۔ضلع گوجرانوالہمطب کمالی ۔۔۔رحمان سٹی فیز6 بلمقابل کالج روڈ رچنا ٹاٶن جی ٹی روڈ شاہدرہ لاہور۔۔ملا قات۔۔۔ہر انگریزی ماہ کے پہلے اتوار 03006264360

اس موضوع کو جواب دیں

یہ سائٹ انفرادی کمپیوٹر، پرسنل سروس سیٹنگ، تجزیاتی و شماریاتی مقاصد، مواد اور اشتہارات کی کسٹمائزیشن میں فرق تلاش کرنے کے لئے کوکیز اور دوسری ٹریکنگ ٹیکنالوجیز کو استعمال کرتی ہے نجی معلومات کی حفاظتی اور کوکیز پالیسی